کچرے

ملک کے سیاحتی مقام پر کچرے کے ڈھیر قدرتی حسن اور عوامی صحت کیلئے زہرِ قاتل ہیں

صفائی نصف ایمان ہے، لیکن تفریحی مقامات پر اکثر اس حقیقت کو نظر انداز کردیا جاتا ہے ملک کے دیگر شہروں کی طرح وفاقی دارلحکومت اسلام آباد کے معروف تفریحی مقام دامن کوہ میں بھی اکثر سیاحوں کا ہجوم رہتا ہے۔ لیکن کچھ لوگ اس خوبصورت جگہ میں بھی کچرہ پھیلانے سے گریز نہیں کرتے۔ دوسری جانب سیاح یہ شکوہ کرتے بھی نظر آتے ہیں کہ انتظامیہ صفائی کا خیال نہیں رکھتی۔ باشعورشہریوں کا کہنا ہے کہ ایسے مقامات کو غلاضت سے محفوظ رکھنا زیادہ ایسا مشکل کام نہیں-
کراچی سے لیکر گلگت اور ہنزہ تک پھیلے بیشتر سیاحتی مقامات پر جابجا کچرے کے ڈھیر یہاں کی دلکشی اور قدرتی حسن کے لئے زہر قاتل ثابت ہورہے ہیں۔ بہت سے پارکس میں کچرا دان موجود ہونے اور سیرگاہوں کو صاف ستھرا رکھنے کی تحریری ہدایات آویزاں ہونے کے باوجود ان کے استعمال کی زحمت کم ہی لوگ کرتے ہیں اور جابجا کوڑا کرکٹ پھیلا دیتے ہیں- ہر چیزکی ذمہ داری حکومت پر عائد کرنے سے بہتر ہے کہ ہر شخص معاشرے کی بہتری کے لئے اپنے حصے کا کردار ادا کرے۔ یقیناً ہمارے ملک میں حقیقی تبدیلی اسی سوچ سے ممکن ہوسکتی ہے۔

یہ خبر پڑھیئے

شاہین شاہ آفریدی کل نکاح کے بندھن میں بندھ جائیں گے

شاہین شاہ آفریدی کل نکاح کے بندھن میں بندھ جائیں گے

قومی کرکٹ ٹیم کے اسٹار فاسٹ بولر شاہین شاہ آفریدی کل نکاح کے بندھن میں …

اپنا تبصرہ بھیجیں

Show Buttons
Hide Buttons