تازہ ترین

وفاقی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی امین الحق سے رومانیہ میں امریکی وفد کی ملاقات

امریکی حکام نے کہا ہے کہ پاکستان میں وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی و ٹیلی کمیونیکیشن کی ڈیجیٹلائزیشن کیلئے کی جانے والی کوششیں قابل ستائش ہیں، پاکستان میں سیلاب کی تباہ کاریوں سے آگاہ ہیں اور متاثرین کی مدد کے لیے ہر ممکن کوششیں کر رہے ہیں۔

یہ بات وفاقی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی و ٹیلی کمیونیکیشن سید امین الحق سے پیر کو رومانیہ کے دارالحکومت بخارسٹ میں انٹرنینشل ٹیلی کمیونیکیشن کانفرنس کی افتتاحی تقریب کے بعد ڈپٹی سیکریٹری آف کمیونیکیشن میکلین ڈیلانے کی قیادت میں امریکہ کے اعلیٰ سطحی وفد نے ملاقات کے دوران کہی۔

سید امین الحق نے امریکی وفد کو پاکستان میں سیلاب سے ہونے والے جانی و مالی نقصانات اور حکومتی امدادی کوششوں سے آگاہ کیا۔ انھوں نے ملک کے دور دراز علاقوں میں ہائی سپیڈ براڈ بینڈ سروسز کی فراہمی، پرسنل ڈیٹا پروٹیکشن بل سمیت دیگر اہم امور سے بھی امریکی وفد کو آگاہ کیا۔ وفد نے بہترین کنکٹویٹی و سمارٹ فون فار آل کے عنوان سے وزارت آئی ٹی کی پالیسی کی تعریف کی۔قبل ازیں وفاقی وزیر آئی ٹی و ٹیلی کمیونیکیشن سید امین الحق کی قیادت میں پاکستانی وفد نے عالمی فورم آئی ٹی یو کی افتتاحی تقریب میں شرکت کی جس میں دنیا کے 186 ممالک کے وزراء اور ہیڈ آف مشنز شریک ہیں۔

بخارسٹ رومانیہ کی تاریخی پیلس آف پارلیمنٹ کی عمارت میں ہونے والی اس کانفرنس کا انعقاد ہر 4 سال بعد کیا جاتا ہے جس میں گذشتہ عرصے میں دنیا کے رکن ممالک کی جانب سے انفارمیشن اینڈ کمیونیکیشن ٹیکنالوجی کے حوالے سے کئے گئے اقدامات کا تنقیدی جائزہ لیتے ہوئے آئندہ چار سال کی ضروریات کے حوالے سے امور طے کئے جاتے ہیں۔

اس مرتبہ کانفرنس کا عنوان ” بہتر ڈیجیٹل مستقبل کی تعمیر سب کیلئے” رکھا گیا ہے جو 26 ستمبر سے 14 اکتوبر تک جاری رہے گی۔ اس دوران آئی ٹی یو کے عہدیداران کا آئندہ 4 برس کیلئے انتخاب بھی کیا جائے گا۔ڈائریکٹر ٹیلی کام ڈویلمپنٹ کے اہم عہدے کیلئے پاکستان کی سابق وزیر آئی ٹی انوشہ رحمان کو وزارت آئی ٹی کی جانب سے نامزد کیا گیا ہے، ان کے مقابلے میں مزید 5 امیدوار بھی میدان میں ہیں۔ کانفرنس کے دوران وفاقی وزیر کی قیادت میں وفد نے اتوار 25 ستمبر اور پیر 26 ستمبر کو سید امین الحق امریکہ، جاپان، ترکی، مصر، آذربائیجان، بحرین سمیت 17 ممالک کے اعلیٰ سطحی وفود سے رسمی اور غیر رسمی ملاقاتیں کی ہیں۔

ان ملاقاتوں میں انفارمیشن ٹیکنالوجی و ٹیلی کمیونیکیشن کے حوالے سے باہمی تعلقات اور دوطرفہ اموراور مستقبل کے ڈیجیٹل منصوبوں پرمفید گفتگو کی گئی۔وفاقی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی و ٹیلی کمیونیکیشن سید امین الحق نے عالمی وفود کو آگاہ کیا کہ حکومت پاکستان وزارت آئی ٹی کے ذیلی ادارہ یونیورسل سروس فنڈ کے ذریعے ملک میں ٹیلی کام انفراسٹرکچر و سروسز کے مختلف پروگرامز پر کام کررہی ہے، یونیورسل سروس فنڈ ملک کے دور دراز علاقوں میں تیز ترین براڈ بینڈ سروسز کی فراہمی کے لئے اہم کردار ادا کر رہا ہے،

یہ پروگرامز نہ صرف ڈیجیٹل منتقلی میں تیزی لا رہے ہیں بلکہ دوردراز علاقوں رہنے والوں لوگوں خصوصا خواتین کو ای سروسز کی فراہمی میں مددگار ثابت ہورہے ہیں، گذشتہ چار سالوں میں 28 ملین لوگوں کو ہائی سپیڈ براڈ بینڈ سروسز کی فراہمی کیلئے 226 ملین ڈالرز کے 79 نئے منصوبوں کے منصوبوں کا آغاز کیا گیا۔

وفاقی وزیر آئی ٹی سید امین الحق نے کہا کہ ملک میں ڈیجیٹل ٹرانسفارمیشن کے لئے “سمارٹ فون فار آل” پالیسی کے لئے بھرپور اقدامات کر رہے ہیں جبکہ شفاف اور تیز ترین پبلک سروسز کی فراہمی کے لئے بھی اقدامات جاری ہیں، حکومت نوجوانوں خصوصا خواتین کو بااختیار بنانے کے لئے پر عزم ہے، اس حوالے سے ملک کے مختلف شہروں میں نیشنل انکوبیشن سینٹرز کے قیام کے ذریعے نوجوانوں کو اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوانے کے لیئے پلیٹ فارمز مہیا کئے گئے ہیں۔

یہ خبر پڑھیئے

نوجوان ماحولیاتی تبدیلی سے متعلق پالیسی پر عمل درآمد یقینی بنائیں، ائیرکوموڈور ریٹائرڈ خالد بنوری

سٹریٹیجک پلان ڈویژن کے محکمہ برائے تخفیف اسلحہ کے سابق ڈائریکٹر جنرل ائیر کوموڈور ریٹائرڈ …

Show Buttons
Hide Buttons