پاکستان موسمیاتی آفات سے نمٹنے کے لئے چینی ماہرین سے مشاورت اور راہنمائی حاصل کرے گا، وفاقی وزیر احسن اقبال

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی و ترقی احسن اقبال نے کہا ہے کہ پاکستان موسمیاتی آفات کے مستقبل کے چیلنجز سے نمٹنے کے لئے ایک بہت مضبوط اور پائیدار حکمت عملی مرتب کرنے کے سلسلے میں چینی ماہرین سے مشاورت اور رہنمائی بھی حاصل کرے گا۔

آفات کی تشخیص، سیلاب سے بچاؤ اور تخفیف کے کاموں میں مدد کے لئے پاکستان پہنچنے والے چینی ماہرین کے 11رکنی گروپ کے این ڈی ایم اے کے دورے کے موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے احسن اقبال کاکہنا تھا کہ پاکستان اور چین کے درمیان معیشت اور زندگی کے تمام شعبوں میں بہت قریبی تعاون موجود ہے۔ انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ اسی طرح مستقبل میں قدرتی آفات سے نمٹنے کے قومی ادارے این ڈی ایم اے اور  چین میں ہنگامی خدمات فراہم کرنے والی تنظیموں کے درمیان تعاون فروغ پائے گا۔

وفاقی وزیر نے کہاکہ حالیہ سیلاب کے باعث پاکستان بدترین موسمیاتی آفات سے دوچار ہوا ہے جس نے 33 ملین افراد کو متاثر کیا جبکہ پاکستان کا ایک تہائی حصہ سیلاب کی زد میں تھا۔ وفاقی وزیر نے کہاکہ حالیہ سیلاب کے باعث پاکستانی معیشت کو 30 سے 40 بلین ڈالر تک کا نقصان پہنچا ہے۔ انہوں نے اس امید کا ظہار کیاکہ آفات کے بعد ہونے والے نقصانات اور ضروریات کی تشخیص کے اس مطالعے کو 24 اکتوبر تک حتمی شکل دے دی جائے گی۔ پاکستان اس مطالعہ کی بنیاد پر تعمیر نو، عوام، انفراسٹرکچر اور معیشت کی بحالی کے لئے ایک حکمت عملی تیار کرے گا۔

اس موقع پر چئیرمین این ڈی ایم اے لیفٹینٹ جنرل اختر نواز نے اپنے اس یقین کا اظہار کیاکہ چینی ماہرین کے دورے سے پاکستان کو نہ صرف بہت کچھ سیکھنے کا موقع ملے گا بلکہ قدرتی آفات سے نمٹنے میں دونوں ممالک کے درمیان تعاون کو فروغ دینے میں بھی مدد حاصل ہو گی۔ انہوں نے 2005 میں پاکستان میں آنے والے زلزلے اور 2010 کے سیلاب کے دوران چین کی جانب سے پاکستان خصوصا این ڈی ایم اے کے ساتھ تعاون کو سراہا۔ انہوں نے حالیہ سیلاب کے دوران چین کی حکومت، چینی قیادت اور عوام کی جانب سے فراہم کردہ امداد اور تعاون کا شکریہ ادا کیا۔

واضح رہے کہ چینی ماہرین کا 11 رکنی گروپ 21 اکتوبر تک پاکستان کے دورے پر موجود ہے جس کا مقصد حالیہ سیلاب سے نمٹنے کے تجزیہ سے متعلق پاکستان کو اپنی تکنیکی خدمات پیش کرنا ہے۔ این ڈی ایم اے کی طرف سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ  پاکستان میں قیام کے دوران چینی ماہرین سیلاب سے متاثرہ علاقوں کا سروے کرنے کے علاوہ موسمیاتی تبدیلیوں، ہائیڈرولوجیکل، ہائیڈرولک اور جغرافیائی نقصانات کے حوالے سے مرتب کئے گئے اعدادوشمار سے متعلق پاکستانی ماہرین سے معلومات کا تبادلہ بھی کریں گے۔

یہ خبر پڑھیئے

شاہین شاہ آفریدی کل نکاح کے بندھن میں بندھ جائیں گے

شاہین شاہ آفریدی کل نکاح کے بندھن میں بندھ جائیں گے

قومی کرکٹ ٹیم کے اسٹار فاسٹ بولر شاہین شاہ آفریدی کل نکاح کے بندھن میں …

Show Buttons
Hide Buttons