وفاقی حکومت کا بلدیاتی انتخابات کرانے کے حکم کے خلاف انٹرا کورٹ اپیل دائر کرنے کا فیصلہ

وفاقی حکومت کا بلدیاتی انتخابات کرانے کے حکم کے خلاف انٹرا کورٹ اپیل دائر کرنے کا فیصلہ

وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ خان نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت نے اسلام آباد ہائی کورٹ (آئی ایچ سی) کے اسلام آباد میں بلدیاتی انتخابات کرانے کے حکم کے خلاف انٹرا کورٹ اپیل دائر کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔جمعہ کو نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر نے کہا کہ وفاقی حکومت اسلام آباد میں بلدیاتی انتخابات کرانے کی پوزیشن میں نہیں ہے۔انہوں نے کہا ہم آئی ایچ سی کے فیصلے کا احترام کرتے ہیں، لیکن انتخابات کا انعقاد ممکن نہیں تھا کیونکہ اتنی مختصر مدت میں انتظامات نہیں کیے جا سکتے تھے۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہ حکم شام کو دفتری اوقات کے بعد جاری کیا گیا ہے۔ انہوں نے استفسار کیا کہ انتخابات کے انتظامات کیسے ممکن ہیں؟۔انہوں نے کہا کہ ایک ہزار پولنگ اسٹیشنوں کو سکیورٹی کی ضرورت ہے اور پولنگ عملہ اسٹیشنوں پر تعینات نہیں اور پولنگ اسٹیشنوں تک انتخابی مواد ابھی تک نہیں پہنچایا گیا تھا۔انہوں نے کہا کہ اتنے کم وقت میں ایک ہزار پولنگ اسٹیشنوں کو سکیورٹی فراہم کرنا ناممکن تھا، کیونکہ اسلام آباد پولیس اکیلے سکیورٹی فراہم کرنے کے لیے کافی نہیں ۔

انہوں نے مزید کہا کہ حکومت کو سکیورٹی کے لیے رینجرز اور ایف سی کو تعینات کرنا ہوگا۔انہوں نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ پی ٹی آئی نے اسلام آباد کے بلدیاتی انتخابات میں دو سال سے زیادہ تاخیر کی۔ملکی مالیاتی پوزیشن کے حوالے سے سوال کے جواب میں وفاقی وزیر نے کہا کہ معاشی محاذ پر مشکلات ضرور ہیں تاہم ڈیفالٹ کا کوئی خطرہ نہیں،غیر ملکی ایجنڈا رکھنے والی سیاسی جماعت ڈیفالٹ کی افواہیں پھیلا رہی ہے۔ انہوں نے پی ٹی آئی اور عمران خان پر الزام لگایا کہ وہ ملک دشمن عناصر کے ساتھ مل کر ملک میں اندرونی اور بیرونی خلل ڈال رہے ہیں۔

یہ خبر پڑھیئے

شاہین شاہ آفریدی کل نکاح کے بندھن میں بندھ جائیں گے

شاہین شاہ آفریدی کل نکاح کے بندھن میں بندھ جائیں گے

قومی کرکٹ ٹیم کے اسٹار فاسٹ بولر شاہین شاہ آفریدی کل نکاح کے بندھن میں …

Show Buttons
Hide Buttons