تازہ ترین
کردار کشی کی غلیظ مہم کا کلچر پھیلانے والوں کی پورے معاشرے کی طرف سے مذمت ہونی چاہیئے، مریم اورنگزیب

کردار کشی کی غلیظ مہم کا کلچر پھیلانے والوں کی پورے معاشرے کی طرف سے مذمت ہونی چاہیئے، مریم اورنگزیب

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب نے اداکاراؤں کی کردار کشی کرنے والے عناصر کی شدید مذمت اور ایف آئی اے سے قانونی کارروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ بدتمیزی، بدتہذیبی اور کردار کشی کی غلیظ مہم کا کلچر پھیلانے والوں کی پورے معاشرے کی طرف سے مذمت ہونی چاہئے، صرف اپنی مائوں، بہنوں کی عزت کی فکر اور باقی دنیا کی خواتین کی عزت نہ کرنے والے عناصر ذہنی بیمار ہیں، اختلاف رائے کرنے والوں کو گالیاں دینا، مائوں بہنوں، بیٹیوں کی عزت نہ کرنا، گھروں پر حملے، گھیرائو کرنا اور ہراساں کرنا ”گھریلو تربیت“ کی علامات ہوتی ہیں۔

بدھ کو اپنے بیان میں وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ اداکار ملک کا اثاثہ اور پاکستان کی پہچان ہیں، بیمار ذہن ہی ان پر حملے کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ فنکار معاشرے میں اپنی محنت سے مقام حاصل کرتے ہیں، وہ مشکلات کا سامنا کر کے مقبولیت عام پاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ خواتین سیاست، صحافت، فن یا کسی بھی شعبے میں کوئی مقام پائیں تو ان کی کردار کشی شروع کر دی جاتی ہے، خواتین کے خلاف یہ بدنما مہم صرف عورت ہونے کی وجہ سے چلائی جاتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ عورتوں کی محنت، جدوجہد اور صلاحیتوں کا اعتراف اور احترام کرنے کے بجائے گند اچھالنا شرمناک ہے، خواتین حوصلے، ہمت اور منزل کو حاصل کرنے کے عزم کی علامت بن چکی ہیں، ایسی بے ہودگی ان کی کامیابیوں کا سفر روک نہیں سکتی۔

یہ خبر پڑھیئے

وزیر مملکت حنا ربانی کھر کی بنگلہ دیشی وزیر خارجہ سے ملاقات

وزیر مملکت حنا ربانی کھر نے سری لنکا کی آزادی کی تقریبات کے موقع پر …

Show Buttons
Hide Buttons