کراچی، حیدر آباد اور دادو میں بلدیاتی انتخابات پھر ملتوی

کراچی، حیدر آباد اور دادو میں بلدیاتی انتخابات پھر ملتوی

ایم کیو ایم کی جانب سے حلقہ بندیوں  پر تحفظات کے بعد سندھ حکومت نے کراچی، حیدر آباد اور دادو میں پندرہ جنوری کو ہونے والے بلدیاتی انتخابات ملتوی کرنے کا اعلان کردیا ہے۔

بلاول بھٹو کی صدارت میں بلدیاتی انتخابات کے حوالے ہونے والے اجلاس کے بعد صوبائی وزیر اطلاعات شرجیل میمن نے سندھ کابینہ کے اجلاس میں کیے گئے فیصلوں سے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ سندھ حکومت نے کراچی کی حلقہ بندیوں سے متعلق نوٹیفکیشن واپس لے لیا ہے۔ ایم کیو ایم کے حلقہ بندیوں پر تحفظات ہیں ، چاہتے ہیں اتحادیوں کے مطالبات کو سنجیدہ لیا جائے۔

انہوں نے بتایا کہ کراچی، حیدرآباد اور دادو میں 15 جنوری کے بلدیاتی انتخابات ملتوی کیے جارہے ہیں البتہ سندھ کے باقی تمام اضلاع میں الیکشن شیڈول کے مطابق ہوں گے۔ شرجیل میمن نے کہا کہ حکومت سندھ دادو میں سیلابی پانی کے باعث الیکشن ملتوی کروانے کے لئے الیکشن کمیشن کو خط لکھ چکی ہے شرجیل میمن نے کہا کہ جماعت اسلامی سے بھی بات کرنے کو تیار ہیں۔

تاہم ٹنڈوالٰہ یار، ٹھٹہ، بدین، سجاول، مٹیاری، جامشورو، ٹنڈو محمد خان میں الیکشن شیڈول کے مطابق پندرہ جنوری کو ہی ہوں گے۔

بلدیاتی الیکشن ملتوی کرنے کے اعلان کے بعد وزیر اعلیٰ سندھ سے فاروق ستار کی سربراہی میں متحدہ کے وفد کی ملاقات ہوئی، ملاقات میں ایم کیو ایم وفد نے سندھ کابینہ کے بلدیاتی حلقہ بندیوں کے حوالے سے کئے گئے فیصلے پر شکریہ ادا کیا، ایم کیو ایم کے وفد میں فیصل سبزواری، مصطفیٰ کمال، وسیم اختر اور جاوید حنیف بھی شریک تھے۔

یہ خبر پڑھیئے

شو: ٹرینڈ سیٹر

شو: ٹرینڈ سیٹر

Show Buttons
Hide Buttons