پرامن بقائے باہمی چین اور امریکہ دونوں کے لئے باٹم لائن ہونی چاہئے: چینی نائب وزیر خارجہ

پرامن بقائے باہمی چین اور امریکہ دونوں کے لئے باٹم لائن ہونی چاہئے: چینی نائب وزیر خارجہ

چین کے نائب وزیر خارجہ شے فنگ نے پیر کے روز کہا کہ پرامن بقائے باہمی وہ بنیادی نکتہ ہے، جس پر چین اور امریکہ دونوں کو قائم رہنا چاہیے۔

انہوں نے دو ہزار تیئس کے حوالے سے میکرو صورتحال کے سالانہ فورم اور چینی تھنک ٹھنک کے عالمی اثرو روخ کے چوتھے فورم سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ چین امریکہ تعلقات کا دائرہ قدرے وسیع ہے، جس کے پوری دنیا کے مستقبل پر اثرات مرتب ہوتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ چین امریکہ تعاون دنیا کے مفاد میں ہے جبکہ چین امریکہ محاز آرائی سے دنیا کو نقصان پہنچتا ہے۔فریقین کے درمیان کسی بھی قسم کا تصادم، چاہے سرد جنگ ہو یا روایتی جنگ، تجارتی جنگ ہو یا سائنسی و تکنیکی، نہ صرف چین اور امریکہ بلکہ دنیا کے دیگر ممالک کے لیے بھی نقصان دہ ہے۔ 

چینی نائب وزیر خارجہ شے فنگ نے کہا کہ سربراہی سفارت کاری چین امریکہ تعلقات کی ترقی کے لئے رہنما کردار ادا کرتی ہے۔ دو ہزار اکیس سے لیکر اب تک صدر شی جن پھنگ اور امریکی صدر بائیڈن کے درمیان چھ مرتبہ ملاقات یا ٹیلیفونک رابطے ہوئے ہیں۔

فریقین کو دونوں صدور کے درمیان طے شدہ اہم اتفاق رائے پر عمل  درآمدکرنا ہوگا۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ چین کو سب سے بڑا اسٹرٹیجک سیاسی خطرہ قرار دینا اور انڈو پیسیفک اسٹریٹجی سمیت جغرافیائی سیاست کے ذریعے چین کو محدود کرنے کی ہر سازش یقیناً ناکام ہوگی۔

یہ خبر پڑھیئے

یوکرین کی صورتحال پر سلامتی کونسل کا اجلاس

مقامی وقت کے مطابق 8 تاریخ کو اقوام متحدہ میں روس کے مستقل مشن کی …

Show Buttons
Hide Buttons